روپے کی قدر میں تنزلی اورغذائی اشیا کی برآمدات بڑھنے سے مہنگائی بلند ترین سطح پر

راچی(پی پی آئی)خام غذائی اشیا کی برآمدات اپریل میں 23.19 فیصد بڑھ کر 57 کروڑ ڈالر تک پہنچ گئیں، جن کا حجم گزشتہ برس کے اسی مہینے 46 کروڑ 30 لاکھ ڈالر رہا تھا۔ایک رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ اس کے نتیجے میں ملک بھر کے صارفین غذائی مصنوعات کی زیادہ قیمتیں ادا کررہے ہیں، رواں مالی سال میں خام غذائی مصنوعات کی برآمدات میں مسلسل نویں مہینے اضافہ ہوا، حالانکہ ملک میں مہنگائی بلند ترین سطح پر رہی۔پی پی آئی کے مطابق وزارت تجارت نے عید الفطر کے بعد پیاز کی برآمد سے پابندی ختم کر دی تھی، اگرچہ ملک کی مقامی منڈیوں میں پیاز کی قیمتیں زیادہ تھیں، دیگر غذائی مصنوعات کی برآمدات میں بھی اضافہ دیکھا گیا، اس کی بنیادی وجہ روپے کی قدر میں تنزلی تھی۔ مہنگائی بلند ترین سطح پررواں مالی سال کے 10 ماہ کے دوران خام غذائی مصنوعات کی برآمدات 45.61 فیصد اضافے کے ساتھ 6 ارب 23 کروڑ تک پہنچ گئیں، جس کا حجم گزشتہ مالی سال کی اسی مدت کے دوران 4 ارب 27 کروڑ ڈالر رہا تھا۔پی پی آئی کے مطابق گزشتہ 2 سالوں کے دوران برآمدات کے اعداد و شمار میں مسلسل اضافے کی وجہ سے باسمتی چاول کی اوسط قیمت 150 روپے سے بڑھ کر 400 روپے فی کلو ہو گئی، جس سے مقامی صارفین کی خریداری  میں کمی آئی۔

Latest from Blog