اسٹیل ملز کیلئے 18ارب 60کروڑ کا بیل آﺅٹ پیکج مسترد کردیا گیا

اسلام آباد: وفاقی حکومت نے اسٹیل ملز کو بچانے کیلئے اٹھارہ ارب ساٹھ کروڑ روپے کا بیل آﺅٹ پیکج مسترد کردیا، نجکاری کیلئے منصوبہ بندی شروع کردی گئی۔ ذرائع کے مطابق تین رکنی کمیٹی نے اسٹیل ملز کو مالی بحران سے نکالنے کیلئے اٹھارہ ارب ساٹھ کروڑ روپے کا بیل آﺅٹ پیکج تجویز کیا تھا، جسے سیکریٹری صنعت و پیداوار شفقت نغمی کے زیرصدارت اجلاس میں مسترد کردیا گیا۔ ادارے کی نجکاری کیلئے جیسا ہے اور جہاں ہے، کی بنیاد پر یا تنظیم نو کے بعد نجکاری کے منصوبے پر غور کیا جارہا ہے۔ بورڈ نے اسٹیل ملز کے اکاﺅنٹس کے آڈٹ کا بھی فیصلہ کیا ہے تاکہ ادارے کی مالی صحت اور واجبات کے بارے میں صحیح اندازہ لگایا جاسکے۔ بورڈ نے کمیٹی کو رضاکارانہ علیحدگی کی اسکیم کیلئے حکمت عملی تیار کرنے کی ہدایت بھی کی ہے۔ اسٹیل ملزانتظامیہ کو پرائیویٹ سیکٹر کی تین کمپنیوں کی پیشکش پر غور کرنے کی بھی ہدایت کی گئی ہے، جنہوں نے تیارشدہ مصنوعات کے عوض خام مال کی فراہمی میں دلچسپی ظاہرکی،، تاہم حکومتی گارنٹی مسترد کردی۔