سی ایس اے گروپ اور کینیڈین سفارتخانہ نے بین الاقوامی تجارت کے معیار کی اہمیت کے حوالے سے سیمنار کی میزبانی کی۔

بیجنگ، 09 دسمبر/پی آرنیوزوائر– چائنہ کے شہر بیجنگ میں سی ایس اے گروپ معروف عالمی معیار کی ترقی ، مصنوعات کی جانچ اور سرٹیفیکیشن کی خدمات فراہم کرنے والا ادارہ اورچین میں کینیڈین سفارت خانے کے زیر اہتمام بین الاقوامی تجارت کے معیار کی اہمیت کے حوالے سے سیمنار منعقد کیا گیا۔ سیمینار سے خطاب کرنے والے مقررین میں آرجی فالکونی ، ایگزیکٹو نائب صدر گورنمنٹ اور کارپوریٹ افیئرز، جنرل کونسل اور کارپوریٹ سیکرٹری،سی ایس اے گروپ کے ہیلن ویلن کورٹ، سی ایس اے گروپ ایکزیکٹونائب صدر، سائنس اور انجینئرنگ اور عبوری ایگزیکٹو نائب صدر،ایشیاء کے گاے سینٹ جیکس، چین میں کینیڈا کے سفیر، ڈاکٹر وانگ یی یی، ڈائریکٹر اسٹینڈرڈائزنگ تھیوری اور اسٹریٹیجی انسٹی ٹیوٹ، چائنہ نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف اسٹینڈرڈائزیشن اور ڈاکٹر بوٹونگ، چائنہ کےاسٹینڈرڈائزیشن انتظامیہ شامل تھے۔

آر جے فیلکونی نے کہا کہ سی ایس اے گروپ کی بین الاقوامی سطح پرمعیار کی ترقی اور معلومات کے حصول کو بڑھانے کے لئے تنظیموں کو پیشکش کرنے کے حوالے سے ایک طویل تاریخ موجود ہے، ہم پیپلز جمہوریہ چین کی حکومت سے مل کر چینی تنظیموں کے ساتھ   معلومات کےا شتراک میں بہت خوش ہیں۔ ہم چائنہ میں معیار ترقی کو فروغ دینے کے لئے کام جاری رکھیں گے اور دنیا کے معروف معیاری مصنوعات کو فروغ دینے اور جدت لانے میں حکومت اور کاروباری اداروں کے ساتھ مل کر کام کریں گے۔

چین کی حکومت عالمی مینوفیکچرنگ میں جدت، معیار اور پائیداری میں چین کو سب سے آگے لانے کے لئے زور دے رہی ہے۔ نئی ٹیکنالوجی کے فروغ، کارکنوں کی کارکردگی ،حفاظت اور تربیت پر زور دینے سے ہی اس مقصد کو حاصل کرنے میں مددملنے میں اہم کردار ادا کریں گے۔

سفیر گائے سینٹ جیکس نے کہا کہ چین میں کینیڈین سفارتخانہ اس قابل قدر سیمینار کی میزبانی کے لئےبہت خوش ہے۔انھوں نے کہا کہ اس طرح کی ترقی اور بین الاقوامی سطح پر تسلیم شدہ معیارات کے استعمال ٹائم ٹومارکیٹ کو کم کرنے میں ایک مرکزی کردار ادا کرے گی جس سے کاروبار اور صارفین دونوں کا فائدہ ہوگا، جس سے ہمارے چینی شراکت داروں اور معروف کینیڈین معیارات کے ماہرین کے درمیان معلومات کےاشتراک میں تعاون کی سہولت کا موقع ملنے پروہ بہت خوش تھے۔

سی ایس اے گروپ عالمی مارکیٹوں کی ضروریات کو سمجھنے کے لئے عالمی سطح پر گاہکوں اور مینوفیکچررز کی مدد کے لئے تربیت اور خدمات پیش کرنے کے لئے سرگرمی جاری رکھے گی۔جس نے یورپ اور شمالی امریکہ سمیت عالمی مارکیٹوں کےلئے مصنوعات کی جانچ اور سرٹیفیکیشن کی خدمات کی مکمل رینچ کے لئے سنگھائی ، گوانگ‌ژو ، کونشان میں لیبارٹریاں قائم کیا ہیں۔ سی ایس اے مستقبل میں چین میں گاہکوں کی بڑھتی ہوئی ضروریات کو پورا کرنے کے لئے سرمایہ کاری کو تیز اور مقامی خدمات کو وسعت دے گا۔

سی ایس اے گروپ کے بارے میں :
سی اسی اے گروپ ایک خود مختار ،حفاظت کے لئے وقف رکنیت ایسوسی ایشن ، سماجی اور پائیداری انجمن ہے،اس کا علم اور مہارت معیار کی ترقی کا احاطہ، تربیت اور مشاورتی حل ، عالمی سطح پر خطرناک جگہ سمیت اہم کاروباری علاقوں کی جانچ اور سرٹیفیکیشن کی خدمات فراہم کرنا اور صنعتی : نقل و حمل ، پلمبنگ اور تعمیرات، طبی ، حفاظت اور ٹیکنالوجی ، آلات اور گیس ، متبادل توانائی ، روشنی کے علاوہ پائیداری کے طور پر صارفین کی مصنوعات کی تشخیص کی خدمات فراہم کرنا ہے۔ سی ایس اے کی تصدیق کا نشان دنیا بھر میں اربوں مصنوعات پر دیکھا جا سکتا ہے۔ سی ایس اے گروپ کے بارے میں مزید معلومات کے لئے ویزٹ کریں www.csagroup.org

میڈیا تعلقات سے رابطہ :
ہولی ہوانگ
ہل اینڈ نوکلٹن اسٹریڈیجیز
+65 6390 3346

زمر بایومیٹ نے مسلسل پانچویں سال چین کے سرفہرست آجر کا اعزاز حاصل کرلیا

ٹاپ ایمپلائرز انسٹیٹیوٹ نے عالمی رہنما ادارے کو مسکیولواسکیلیٹل صحت میں ملازمین کے لیے بہترین حالات اور چین میں کارپوریٹ کلچر پر اعزاز سے نوازا

سنگاپور، 10 دسمبر 2015ء/پی آرنیوزوائر– مسکیولواسکیلیٹل صحت کے شعبے میں عالمی رہنما ادارہ زمر بایومیٹ ہولڈنگز انکارپوریٹڈ یہ اعلان کرتے ہوئے خوش ہے کہ کمپنی نے ٹاپ ایمپلائرز انسٹیٹیوٹ کی جانب سے مسلسل پانچویں سال چین میں سرفہرست آجر کا اعزاز حاصل کیا ہے۔

Zimmer Biomet Logo.

زمر بایومیٹ چین و ہانگ کانگ کے مینیجنگ ڈائریکٹر لی یونگ منگ نے کہا کہ “ہم زمر بایومیٹ کی چین میں جاری توسیع پر بہت فخر محسوس کرتے ہیں، جس میں اپنے لوگوں کی نمو اور ترقی میں سرمایہ کاری کا پہلو شامل ہے۔ ہم اپنے ملازمین کی ضروریات کو پورا کرنے کے لیے جدوجہد کرتے ہیں، تاکہ وہ کمپنی میں کامیابی اور ترقی کے لیے وسائل کے حامل ہوں۔”

زمر بایومیٹ 2015ء کے لیے چین میں “سرفہرست آجر” کی حیثیت سے منتخب ہونے والے صرف XX اداروں میں سے ایک ہے۔ زمر بایومیٹ چین کو ملازمین کے لیے غیر معمولی صورتحال فراہم کرنے کے تسلسل اور ساتھ ساتھ ادارے کی تمام سطحوں پر پیشہ ورانہ ترقیاتی پروگرام رکھنے پر تسلیم کیا گیا۔

زمر بایومیٹ ایشیا پیسفک کے صدر سانگ یی نے کہا کہ “چین مسکیولواسکیلیٹل صحت کے لیے بڑھتی ہوئی مارکیٹ ہے، اور ہم کمرشل، مینوفیکچرنگ اور کارپوریٹ ماہرین کی صنعت کی بہترین ٹیموں کے ساتھ آگے کے مواقع پر پورا اتر رہے ہیں۔ ہم اپنے افراد کی اپنی کامیابی پر ممنون ہیں۔ وہ ہر روز چین بھر میں سرجنوں کے کے ہاتھوں میں جدید اور مریض کے لیے مخصوص طبی حل فراہم کرتے ہیں۔”

ٹاپ ایمپلائرز انسٹیٹیوٹ کے بارے میں
ٹاپ ایمپلائرز انسٹیٹیوٹ ایک آزاد ادارہ ہے جس کا ہیڈکوارٹر ہالینڈ میں ہے۔ انسٹیٹیوٹ 1991ء سے دنیا بھر میں بڑے آجروں کے لیے ہیومن ریسورس پروگرام پر تحقیق کررہا ہے۔ انسٹیٹیوٹ کمپنی کے ہیومن ریسورس ماحول کے جامع آڈٹ کے ذریعے “ٹاپ ایمپلائرز” کو تسلیم کرتا ہے جس میں حکمت عملی، پالیسی نفاذ، مانیٹرنگ اور ملازمین کی ترقی شامل ہے۔ انفرادی کمپنی نتائج کا بین الاقوامی معیارات سے تقابل کیا جاتا ہے۔ مزید معلومات کے لیے http://www.top-employers.com دیکھیں۔

زمر بایومیٹ کے بارے میں
1927ء میں قائم ہونے والا اور وارسا، انڈیانا میں ہیڈ کوارٹر رکھنے والا زمر بایومیٹ مسکیولواسکیلیٹل صحت میں عالمی رہنما ہے۔ ہم آرتھوپیڈک تنظیم نو کی مصنوعات ڈیزائن، تیار اور مارکیٹ کرتے ہیں؛ کھیلوں کی ادویات، بایولوجکس، شدید اور جراحی مصنوعات؛ ریڑھ اور ہڈیوں کو آرام دینے، کرینیو میکسی لو فیشل اور تھوریکک مصنوعات؛ دانتوں کے امپلانٹس اور متعلقہ سرجیکل مصنوعات۔

ہم جدت طرازی کی رفتار کو بڑھانے کے لیے دنیا بھر میں صحت کے ماہرین سے تعاون کر رہے ہیں۔ ہماری مصنوعات اور حل ہڈیوں، جوڑوں اور ان کو سہارا دینے والے نرم ٹشوز کے امراض، یا زخموں، سے متاثرہ مریضوں کو علاج میں مدد دیتے ہیں۔ صحت کے ماہرین کے ساتھ مل کر ہم کئی ملین افراد کی زندگیوں کو بہتر بنا رہے ہیں۔

ہم دنیا بھر میں 25 سے زیادہ ممالک میں آپریشنز رکھتے ہیں اور 100 سے زیادہ ممالک میں مصنوعات فروخت کرتے ہیں۔ مزید معلومات کے لیے www.zimmerbiomet.com دیکھیں یا ٹوئٹر پر twitter.com/zimmerbiomet پر زمر بایومیٹ کو فالو کریں۔

رابطے:
ذرائع ابلاغ
ایشیا پیسفک
جیسن لی
65-9008-4780+
Jason.lee@zimmerbiomet.com

سرمایہ کار
رابرٹس جے مارشل جونیئر
1-574-371-8042+
robert.marshall@zimmerbiomet.com

وارسا، امریکا
مونیکا کینڈرک
1-574-372-4989+
monica.kendrick@zimmerbiomet.com

لوگو: http://photos.prnasia.com/prnh/20151203/8521508241LOGO

اے پی اے سی میڈ نے ایشیا پیسفک میڈ ٹیک فورم 2015ء کا آغاز کردیا

ابتدائی صنعتی ایونٹ تحقیق کرتا ہے کہ طبی آلات تک بہتر رسائی، تعطل انگیز جدت طرازی اور تعاون ایک صحت مند مستقبل کی تعمیر کے لیے کلید ہیں

سنگاپور، 10 دسمبر 2015ء/پی آرنیوزوائر– طبی ٹیکنالوجی کے ماہرین کے لیےخطے کی اہم ترین تقریب ایشیا پیسفک میڈٹیک فورم 2015ء آج سنگاپور میں شروع ہوئی ہے جس کا موضوع مشترکہ طور پر ایک صحت مند مستقبل کی تعمیر ہے۔

ایشیا پیسفک میڈیکل ٹیکنالوجی ایسوسی ایشن (اے پی اے سی میڈ) کی میزبانی میں دو روزہ کانفرنس صنعت کو درپیش مسائل پر متوجہ ہوگی اور جدت طرازی اور تعاون ایشیا بحر الکاہل میں عوام کے لیے ناموزوں سہولیات کو حل کرنے میں مدد دے رہے ہیں۔ مکمل ایجنڈے کے لیے medtechforum.asiaدیکھیں۔

طبی ٹیکنالوجی صنعت پر نئی تحقیق کے نتائج کانفرنس میں عالمی انتظامی مشاورتی ادارے میک کنسے اینڈ کمپنی کی جانب سے پیش کیے جائیں گے۔ وائٹ پیپر یعنی قرطاس ابیض ایشیا بحر الکاہل میں طبی ٹیکنالوجی کی صنعت کے لیے موجود مواقع اور درپیش چیلنجز کا جائزہ لیتا ہے اور میدان تجویز کرتا ہے جہاں تبدیلی لانے کے لیے صنعت تعاون کرسکتی ہے۔

اے پی اے سی میڈ کے چیف ایگزیکٹو افسر فریڈرک نائی برگ نے کہا کہ “فورم ایشیا بحر الکاہل خطے کے لیے ایک اہم وقت پر آیا ہے، جہاں دنیا کی دو تہائی آبادی رہتی ہے لیکن اکثریت کی صحت کی ضروریات اب بھی پوری نہیں ہوتیں۔ دنیا بھر میں 400 بلین امریکی ڈالرز کی قدر رکھنے والا طبی ٹیکنالوجی کا شعبہ ان چیلنجز سے نمٹنے میں مدد کے لیے جدید سہولیات فراہم کرتا ہے۔”

“ہمارا خطہ متنوع ہے اور صحت کے پیچیدہ چیلنجز سے بھرا پڑا ہے۔ اے پی اے سی میڈ پالیسیوں کو ترتیب دینے میں صنعت کے لیے ایک متحدہ آواز فراہم کرنے کے لیے بہترین مقام رکھتی ہے۔ صرف شراکت داریوں اور تعاون کے ذریعے ہم ایک حقیقی فرق پیدا کر سکتے ہیں۔”

فورم سینے کے سرطان سے صحت یابی پانے والی ایک مریض کی تقریر اور ان کی مندوب ترش ہیپ برن کے ساتھ شروع ہوا۔

“مجھ میں دو سال قبل سینے کے سرطان کی تشخیص ہوئی، اور کیونکہ یہ میرے اور میرے خاندان کے لیے بہت بڑا دھچکا تھا، اس لیے مجھے بہت خوشی محسوس ہو رہی ہے کہ میں اپنے علاج اور سرجیکل امکانات کے حوالے سے ایک باخبر فیصلہ کرنے کے قابل تھی۔ طبی آلات اور ٹیکنالوجیوں میں پچھلے 10 سالوں میں بڑی ترقی ہوئی ہے جو مریضوں پر بہت زیادہ اثر رکھتی ہیں۔ البتہ میں اچھی طرح آگاہ تھی کہ ایشیا  بحر الکاہل میں ایسے کئی مریض ہیں جو چند زندگی بچانے کی ٹیکنالوجی اور علاج کے طریقوں تک رسائی نہیں رکھتے، چاہے وہ ادائیگی کی کمی ہو یا بنیادی ڈھانچے کی کمی کی وجہ سے۔”

بھرپور اور ہنگامی سیشن کا ایک سلسلہ انتظامی ماحول، جدت طرازی، پالیسی اور صلاحیت کے حوالے سے موضوعات کا احاطہ کریں گے۔دو دن پر پھیلے دیگر پینل میں طبی تعلیم کا مستقبل، صحت عامہ میں تعطل انگیز جدت طرازی اور صحت عامہ کی وضع بندی کے حوالے سے سی ای او گول میز شامل ہیں۔

ذرائع ابلاغ کے سوالات APACMed@edelman.comپر اے پی اے سی میڈ پریس آفس پر کیے جا سکتے ہیں۔

اے پی اے سی میڈ کے بارے میں
ایشیا پیسفک میڈیکل ٹیکنالوجی ایسوسی ایشن (اے پی اے سی میڈ) ایشیا بحر الکاہل میں طبی آلات اور تجرباتی تشخیصی صنعت کے لیے متحدہ آواز فراہم کرتا ہے۔ 2014ء میں قائم ہونے والا اے پی اے سی میڈ جدت طرازی اور اثر انگیز پالیسی کے فروغ کے لیے جدوجہد کرتا ہے جو مریضوں کے لیے صحت عامہ کی رسائی کو آکے بڑھاتا ہے۔ موجودہ اراکین میں طبی ٹیکنالوجی کے معروف ادارے شامل ہیں۔

مکمل فہرست کے لیے جائیے: http://www.apacmed.org/membership

ہمارے ساتھ رہیے:
ٹوئٹر:https://twitter.com/apacmed
فیس بک: https://www.facebook.com/APACMed
لنکڈ اِن: https://www.linkedin.com/company/asia-pacific-medical-technology-association
ویب سائٹ:  http://www.apacmed.org/

رابطہ برائے ذرائع ابلاغ:
ایشلے لاؤ
ایڈلمین پبلک ریلیشنز سنگاپور
ٹیلی فون:
65-6494-1578+
ای میل: ashley.lau@edelman.com

جے اے سولر نے زمبابوے میں100میگا واٹ کے پہلی تین بڑے پیمانے زمین میں نصب سولر پاور اسٹیشنوںمیں سے ایک کا معاہدہ حاصل کر لیا

منیاتی، زمبابوے 09 دسمبر 2015ء/ پی آرنیوزوائر– دنیا بھر میں شمشی توانائی کی اعلیٰ اورمعیاری مصنوعات بنانے والی سب سے بڑی کمپنیوں میں سے ایک جے اے سولر ہولڈنگ کمپنی لمیٹیڈ (نیس ڈیک:JASO )(جے اے سولر)نے آج اعلان کیا ہے کہ انھوں نے زمبابوے میں 100میگا واٹ کےزمین میں نصب تین میں سے پہلے فوٹوولٹک (“پی وی”) ماڈیولز کی فراہمی کا معاہدہ حاصل کر لیا ہے۔اس منصوبےسے مشترکہ طور پر 300میگاواٹ پیداواری صلاحیت میں اضافہ ہو گا اور اس منصوبے کے لئے تین ٹھیکیدار زیڈ ٹی ای، چائنا ایم سی سی 17 گروپ اور انٹراٹریک زمبابوے کام کر رہے ہیں۔ جے اے سولر تعمیرات میں شامل چین ایم سی سی 17گروپ کو پی وی موڈیولز فراہم کرے گا۔

JA Solar Logo.

http://photos.prnasia.com/prnvar/20150522/0861504483LOGO

زمبابوے کے ریاستی حصولی بورڈ کی طرف سے فراہم کردہ معلومات کے مطابق، پاور پلانٹس منیاتی، انسوکامینی(منیاتی کے قریب چھوٹی کمیونٹی)اور ماتبیل لینڈ جنوبی کے دارلحکومت گوانڈا(زمبابوےکا صوبہ بوٹسوانہ کی سرحد کےقریب واقع ہے) ۔ جے اے سولر کے ترجمان نے کہا کہ کمپنی نے اس سال کے اوائل میں منیاتی منصوبے کی تعمیر کے لئے ماڈیول کی فراہمی کے لئے زمبابوے کی پاور کمپنی کے ساتھ مذاکرات کا آغاز کیا۔ ترجمان نے مزید وضاحت کی کہ چائنہ ایم سی سی 17 گروپ منیاتی منصوبے کی تعمیر کے لئے بولی جیتنے کے بعد جے اے سولر کو خصوصی ماڈیول سپلائر کے طور پر منتخب کیا۔

تین منصوبوں کے لئے 544 ملین امریکی ڈالر کل پی سی ماڈیول کے معاہدے کی قیمت شامل کیا گیا تھا، جن میں سے 179ملین امریکی ڈالرجے اے سولر نے حاصل کئے ۔ منصوبے کا آغاز 2016کے اختتام میں یا 2017 کے ابتداء میں شیڈول کیا گیا ہے جو 2017کے آخر تک مکمل ہونے کی توقع ہے۔

زمبابوے کی طرح سب صحارا افریقہ میں بہت سے ممالک بجلی کی شدید قلت کا شکار ہیں، فی الحال ملک کی بجلی کی اکثریت ایک بڑی تھرمل پاور اسٹیشن تین چھوٹے تھرمل پاور اسٹیشنوں اور ایک پن بجلی گھر کے ذریعے فراہم کی جاتی ہیں ان پاور پلانٹس کے تقریبا نصف بجلی کی پیداری یونٹس کئی سالوں سے کارآمد نہیں ہیں جس کی وجہ سے یہ پاور پلانٹس ملک کی بجلی کی مانگ کو پورا کرنے میں ناکام رہتی ہیں۔کان کنی کمپنیوں کی بجلی کی سرکش کھپت کے باعث ملک بھر کے شہروں میں بجلی کی فراہمی معطل ہوجاتی ہیں۔ گزشتہ دو سالوں کے دوران زمبابوے حکومت نے تین بڑے پیمانے پر زمین میں نصب پی وی پاور پلانٹس سمیت جبلی کے منصوبوں کی تعمیر کو تیز کر دیا ہیں۔اس دور میں دنیا بھر کی حکومتوں نے قابل تجدید توانائی کی ترقی کے کاروبار پر تیزی سے توجہ مرکوز کی ہیں جس سے بڑھتی ہوئی ضرورت کو پورا کرنے کے لئے مواقع سامنے آئے گے۔ 1دسمبر 2015کی صبح چینی صدر جینپن ژی کا زمبابوے کےسرکاری دورے کے بعد دونو ممالک کے درمیان تجارتی اور توانائی سمیت متعدد شعبوں میں تعاون کا ایک سلسلہ مشغول کرنے پر اتفاق ہوا تھا۔

جے اے سولر کے ایگزیکیٹیو صدر ژی جیان نے کہاکہ “صدر شی نے افریقہ کے سرکاری دورے میں پہلا قدم زمبابوے میں رکھا جس کا اشارہ تھا کہ دونوں ممالک توانائی کے میدان میں ایک دوسرے کے ساتھ تعاون چاہتے ہیں۔ زمبابوے کے لیے پی وی موڈیولز کی فراہمی کے معاہدہ کا حصول جے اے سولر کے لیے زمبابوے سے مضبوط تعلقات کے نہ صرف مواقع فراہم کرے گا لیکن دیگر افریقی ممالک سے تعلقات بڑھانے میں بنیاد فراہم کرے گا۔ جے اے سولر پوری دنیا کی مارکیٹ میں بہترین معیار کی سولر اشیا کی فراہمی کے عزم کو جاری رکھے گا جیسے کہ ہم اہنے صارفین کو بہترین معیار کی اشیا کی خدمات کو جاری رکھے ہوئے ہیں۔

چائنا MCC27 گروپ کی قیادت نے کہا کہ ہم زمابوے کے عوام کو بجلی کی ضروریات کو پوراکرنے کے لیے منیاتی سولر پروجیکٹ کو زمبابوے میں پہلے سولر پرجیکٹ کے طورپر مکمل کرنے کے لیے مصروف ہیں۔

لوگو :http://photos.prnasia.com/prnh/20150522/0861504483LOGO

اے پی اے سی میڈ نے ایشیا پیسفک میڈ ٹیک فورم 2015ء کا آغاز کردیا

ابتدائی صنعتی ایونٹ تحقیق کرتا ہے کہ طبی آلات تک بہتر رسائی، تعطل انگیز جدت طرازی اور تعاون ایک صحت مند مستقبل کی تعمیر کے لیے کلید ہیں

سنگاپور، 10 دسمبر 2015ء/پی آرنیوزوائر– طبی ٹیکنالوجی کے ماہرین کے لیےخطے کی اہم ترین تقریب ایشیا پیسفک میڈٹیک فورم 2015ء آج سنگاپور میں شروع ہوئی ہے جس کا موضوع مشترکہ طور پر ایک صحت مند مستقبل کی تعمیر ہے۔

ایشیا پیسفک میڈیکل ٹیکنالوجی ایسوسی ایشن (اے پی اے سی میڈ) کی میزبانی میں دو روزہ کانفرنس صنعت کو درپیش مسائل پر متوجہ ہوگی اور جدت طرازی اور تعاون ایشیا بحر الکاہل میں عوام کے لیے ناموزوں سہولیات کو حل کرنے میں مدد دے رہے ہیں۔ مکمل ایجنڈے کے لیے medtechforum.asiaدیکھیں۔

طبی ٹیکنالوجی صنعت پر نئی تحقیق کے نتائج کانفرنس میں عالمی انتظامی مشاورتی ادارے میک کنسے اینڈ کمپنی کی جانب سے پیش کیے جائیں گے۔ وائٹ پیپر یعنی قرطاس ابیض ایشیا بحر الکاہل میں طبی ٹیکنالوجی کی صنعت کے لیے موجود مواقع اور درپیش چیلنجز کا جائزہ لیتا ہے اور میدان تجویز کرتا ہے جہاں تبدیلی لانے کے لیے صنعت تعاون کرسکتی ہے۔

اے پی اے سی میڈ کے چیف ایگزیکٹو افسر فریڈرک نائی برگ نے کہا کہ “فورم ایشیا بحر الکاہل خطے کے لیے ایک اہم وقت پر آیا ہے، جہاں دنیا کی دو تہائی آبادی رہتی ہے لیکن اکثریت کی صحت کی ضروریات اب بھی پوری نہیں ہوتیں۔ دنیا بھر میں 400 بلین امریکی ڈالرز کی قدر رکھنے والا طبی ٹیکنالوجی کا شعبہ ان چیلنجز سے نمٹنے میں مدد کے لیے جدید سہولیات فراہم کرتا ہے۔”

“ہمارا خطہ متنوع ہے اور صحت کے پیچیدہ چیلنجز سے بھرا پڑا ہے۔ اے پی اے سی میڈ پالیسیوں کو ترتیب دینے میں صنعت کے لیے ایک متحدہ آواز فراہم کرنے کے لیے بہترین مقام رکھتی ہے۔ صرف شراکت داریوں اور تعاون کے ذریعے ہم ایک حقیقی فرق پیدا کر سکتے ہیں۔”

فورم سینے کے سرطان سے صحت یابی پانے والی ایک مریض کی تقریر اور ان کی مندوب ترش ہیپ برن کے ساتھ شروع ہوا۔

“مجھ میں دو سال قبل سینے کے سرطان کی تشخیص ہوئی، اور کیونکہ یہ میرے اور میرے خاندان کے لیے بہت بڑا دھچکا تھا، اس لیے مجھے بہت خوشی محسوس ہو رہی ہے کہ میں اپنے علاج اور سرجیکل امکانات کے حوالے سے ایک باخبر فیصلہ کرنے کے قابل تھی۔ طبی آلات اور ٹیکنالوجیوں میں پچھلے 10 سالوں میں بڑی ترقی ہوئی ہے جو مریضوں پر بہت زیادہ اثر رکھتی ہیں۔ البتہ میں اچھی طرح آگاہ تھی کہ ایشیا  بحر الکاہل میں ایسے کئی مریض ہیں جو چند زندگی بچانے کی ٹیکنالوجی اور علاج کے طریقوں تک رسائی نہیں رکھتے، چاہے وہ ادائیگی کی کمی ہو یا بنیادی ڈھانچے کی کمی کی وجہ سے۔”

بھرپور اور ہنگامی سیشن کا ایک سلسلہ انتظامی ماحول، جدت طرازی، پالیسی اور صلاحیت کے حوالے سے موضوعات کا احاطہ کریں گے۔دو دن پر پھیلے دیگر پینل میں طبی تعلیم کا مستقبل، صحت عامہ میں تعطل انگیز جدت طرازی اور صحت عامہ کی وضع بندی کے حوالے سے سی ای او گول میز شامل ہیں۔

ذرائع ابلاغ کے سوالات APACMed@edelman.comپر اے پی اے سی میڈ پریس آفس پر کیے جا سکتے ہیں۔

اے پی اے سی میڈ کے بارے میں
ایشیا پیسفک میڈیکل ٹیکنالوجی ایسوسی ایشن (اے پی اے سی میڈ) ایشیا بحر الکاہل میں طبی آلات اور تجرباتی تشخیصی صنعت کے لیے متحدہ آواز فراہم کرتا ہے۔ 2014ء میں قائم ہونے والا اے پی اے سی میڈ جدت طرازی اور اثر انگیز پالیسی کے فروغ کے لیے جدوجہد کرتا ہے جو مریضوں کے لیے صحت عامہ کی رسائی کو آکے بڑھاتا ہے۔ موجودہ اراکین میں طبی ٹیکنالوجی کے معروف ادارے شامل ہیں۔

مکمل فہرست کے لیے جائیے: http://www.apacmed.org/membership

ہمارے ساتھ رہیے:
ٹوئٹر:https://twitter.com/apacmed
فیس بک: https://www.facebook.com/APACMed
لنکڈ اِن: https://www.linkedin.com/company/asia-pacific-medical-technology-association
ویب سائٹ:  http://www.apacmed.org/

رابطہ برائے ذرائع ابلاغ:
ایشلے لاؤ
ایڈلمین پبلک ریلیشنز سنگاپور
ٹیلی فون:
65-6494-1578+
ای میل: ashley.lau@edelman.com

ایکسپریس نے “اپنی لڑکیوں” سوکی واٹرہاؤس اور میگڈالینافریکوویاک کے ساتھ ‘ایڈیشن’ کیپسول کلیکشن جاری کردی

EXPRESS Debuts ‘Edition’ Capsule Collection.

نیویارک، 8 دسمبر 2015ء/پی آرنیوزوائر– ایکسپریس انکارپوریٹڈ (این وائی ایس ای: EXPR) آج پہلی بہترین کیپسول کلیکشن، ایکسپریس ‘ایڈیشن’ جاری کرنے کا اعلان کیا ہے۔ ‘ایڈیشن’ یہ قدیم معیارات کو جدید نظر سے دیکھ کر حاصل ہونے والے تاثر سے کشید کیا گیا ہے، یہ ملاپ ہے زرق برق کپڑوں، آگے بڑھتی تکنیک اور تفصیلات پر بھرپور توجہ پر زور کے ساتھ خوبصورت اور عام انداز کا ۔ سوکی واٹر ہاؤس اور میگڈالینافریکوویاک نئی کلیکشن کے چہرے ہیں اور ڈیجیٹل اور پرنٹ مارکیٹنگ میں پیش ہوں گی۔

تصویر – http://photos.prnewswire.com/prnh/20151130/291859
تصویر – http://photos.prnewswire.com/prnh/20151130/291860
تصویر – http://photos.prnewswire.com/prnh/20151130/291861
لوگو – http://photos.prnewswire.com/prnh/20130910/NY76292LOGO

EXPRESS Logo.

ایکسپریس کے صدر اور سی ای اوڈیوڈکورن برگ نے کہا کہ “ہم ‘ایڈیشن’ کا آغاز دراصل بھرپور فیشن کو عام انداز سے ملانے کے ایکسپریس کے فلسفے کے طور بخوشی کر رہے ہیں۔ ہم نے اپنی باصلاحیت ڈیزائن ٹیم کو ایسی جدید کیپسول کلیکشن بنانے کا حوصلہ دیا جو اسٹائل سے تحریک پاتی ہو، آرزو مندانہ ہو اور خواتین کو دوران سفر فیشن ایبل طرز زندگی فراہم کرے۔ ایڈیشن ایسی ایکسپریس لڑکی کی شخصیت بناتا ہے جو عاشقانہ، پر اعتماد، عمدہ اور پرکشش فرد ہو۔”

EXPRESS Debuts ‘Edition’ Capsule Collection.

یکم دسمبر سے 27 اسٹورز اور آن لائن express.com/editionپر دستیاب ایکسپریس ‘ایڈیشن’ کلیکشن18 انداز پر مشتمل ہے جن میں 48 سے 498 ڈالرز تک قیمت رکھنے والے 35 ملبوسات اور 20 سے 298 ڈالرز کی قیمت رکھنے والے 18 لوازمات شامل ہیں۔ انوکھا ڈیزائن مستند نیم رسمی جوڑے، جالی دار ملبوسات، ریشم اور شیون کے بلاؤزز، بہترین بائیکر جیکٹ، آراستہ و پیراستہ بینڈ جیکٹ، ریزن تہہ رکھنے والی جینز اور چمڑے کی پینٹوںکا جدید انداز پیش کیا۔ شہری حس کے لیے سیاہ اور قدرتی رنگ میز گہرے قرمزی، ہاتھی دانت اور سونے کے رنگوں کا امتزاج پیش کرتی ہے۔

صارفین انسٹاگرام پر @ExpressRunway، ٹوئٹر پر @ExpressLife ، اسنیپچیٹ پر @ExpressLife اور Facebook.com/EXPRESS پر پس پردہ افعال دیکھ سکتے ہیں۔

ایکسپریسانکارپوریٹڈ کے بارے میں

EXPRESS Debuts ‘Edition’ Capsule Collection.

ایکسپریس مردوں اور عورتوں کے لیے ایک خصوصی ملبوسات و لوازمات تیار کرنے والا ادارہ ہے، جو 20 سے 30 سال کے درمیان کے صارفین کو ہدف بناتا ہے۔ ادارہ 30 سال سے زیادہ کا تجربہ رکھتا ہے اور پرکشش قیمت پر زندگی کے مختلف مواقع کے لیے فیشن اور معیار کا انوکھا امتزاج پیش کرتا ہے، یہ کام، بے ضابطہ، اور گھر سے باہر کی تمام فیشن ضروریات کو پورا کر رہا ہے۔ ادارہ اس وقت 600 خوردہ اور فیکٹری آؤٹ لیٹ اسٹورز رکھتا ہے، جو بنیادی طور پر امریکا، کینیڈا اور پورٹوریکو میں بڑے شاپنگ مالز، لائف اسٹائل سینٹرز اور عام مقامات پر موجود ہیں۔ ایکسپریساشیاءمشرق وسطیٰ، لاطینی امریکا اور جنوبی افریقہ میں بھی فرنچائزمقاماتکے ذریعے دستیاب ہیں۔ ایکسپریساپنی مصنوعات ای-کامرس ویب سائٹ،www.express.com، کے ساتھ ساتھ اپنی موبائل ایپ کے ذریعے بھی فروخت کرتا ہے۔