اے این زیڈ نے جنوبی بحر الکاہل کے 9 جزیرہ ممالک میں یونین پے کارڈز کی جامع قبولیت کو ممکن بنا دیا – فجی میں یونین پے کارڈ قبولیت کی کوریج 90 فیصد سے زیادہ تک پھیل جائے گی

شنگھائی، چین، 13 مئی 2016ء/سن ہوا-ایشیانیٹ/– 11 مئی کو یونین پے انٹرنیشنل اور اے این زیڈ نے فجی میں مشترکہ طور پر اعلان کیا کہ یونین پے کارڈز (62 سے شروع ہونے والے کارڈز نمبر) جنوبی بحر الکاہل کے 9 جزیرہ ممالک میں اے این زیڈ کے تمام اے ٹی ایمز اور پی او ایس ٹرمینلز پر قبول کیے جائیں گے۔ یونین پے چپ کارڈز ان ممالک میں پہلی بار قبول ہوں گے۔ کے جیان بو، سی ای او یونین پے انٹرنیشنل، اور سعود منام، اے این زیڈ کنٹری مینیجر فجی، نے دستخط کی تقریب میں شرکت کی۔ ایاز سید خیوم، فجی کے اٹارنی جنرل اور وزیر خزانہ، فیاض صدیق کویا، فجی کے صنعتی تجارت و سیاحت کے وزیر، یولنڈا چین، فجی کی وزارت تجارت کے چائنا ٹریڈ کمشنر، اور ٹرومین ربیڈلی، چیئرمین سیاحت فجی اس موقع پر تہنیتی پیغام کے ساتھ موجود تھے۔

اے این زیڈ ایشیا بحر الکاہل میں یونین پے انٹرنیشنل کا اہم شراکت دار ہے۔ اپریل 2014ء میں فریقین نے دونوں ممالک کے سربراہان مملکت کی موجودگی میں تعاون کے ایک معاہدے پر دستخط کیے۔ اس کے بعد اے این زیڈ نے آسٹریلیا میں 80,000 پی او ایس ٹرمینلز اور 2,000 سے زیادہ اے ٹی ایمز پر یونین پے کارڈ قبولیت کو ممکن بنایا۔ اس جنوری میں اے این زیڈ نے نیوزی لینڈ میں اپنے اے ٹی ایمز اور تاجروں کے لیے یونین پے کارڈز قبول کرنا ممکن بنایا۔ اب یہ تعاون جنوبی بحر الکاہل تک پھیل گیا ہے جس میں فجی، پاپوا نیو گنی، وانواٹو، سمووا، ٹونگا، کک جزائر، سولومن جزائر، کریباٹی اور مشرقی تیمور شامل ہیں۔

تعاون کے ذریعے فجی اور پاپوا نیو گنی میں یونین پے کارڈز کی قبولیت کوریج 90 فیصد سے زیادہ تک بڑھ چکی ہے۔ دریں اثناء، کریباٹی اور مشرقی تیمور میں یہ یونین پے کا آغاز ہے جبکہ سمووا، سولومن جزائر اور کک جزائر میں تاجر پہلی بار یونین پے کارڈز قبول کرنے کے قابل ہوں گے۔ آگے اے این زیڈ کمبوڈیا اور ویت نام میں اپنے اے ٹی ایمز پر یونین پے کارڈز کی قبولیت ممکن بنائے گا ۔

کے جیان بو نے کہا کہ جنوبی بحر الکاہل جزیرہ ممالک “21 ویں صدی کی بحری شاہراہ ریشم” کا اہم حصہ ہیں۔ یونین پے انٹرنیشنل مقامی یونین پے قبولیت کے ماحول کو بہتر بنا رہا ہے تاکہ خطے کا دورہ کرنے والے یونین پے کارڈ یافتگان کے لیے باسہولت ادائیگی خدمت فراہم کی جائے۔ یہ تعاون نہ صرف یونین پے قبولیت کے اثرات اور خطے میں کارڈ استعمال کرنے کے تجربے کو بہتر بنائے گا بلکہ مقامی کارڈ اجرا کے لیے مستحکم بنیاد بھی ڈالے گا، جو مقامی افراد کے لیے نئے ادائیگی آپشنز فراہم کرے گا۔

چائنا پیسفک فورم کی جانب سے فجی، وانواٹو اور سمووا کو جنوبی بحر الکاہل میں اہم سیاحتی مقامات کی حیثیت سے شناخت کیا گیا ہے۔ ٹورازم فجی کے مطابق 2015ء میں 40,000 چینی سیاحوں نے فجی کا دورہ کیا، جو سال بہ سال میں 40 فیصد اضافہ ہے۔ یونین پے انٹرنیشنل مرکزی دھارے کے اداروں کے ساتھ اپنے تعاون کو بڑھا رہا ہے تاکہ خطے میں قبولیت کے ماحول کو مسلسل بہتر بنائے۔

مزید معلومات کے لیے: http://www.unionpayintl.com/

ذریعہ: یونین پے انٹرنیشنل

ڈیڈی چکسنگ نے موجودہ فنڈریزنگ مرحلے میں پیشرفت کا اعلان کردی

ایپل سے 1 ارب امریکی ڈالرز کی تزویراتی سرمایہ کاری وصولبیجنگ، 13 مئی 2016ء/پی آرنیوزوائر/–

ایک ہی مقام پر دنیا کے معروف نقل و حمل کے متحرک پلیٹ فارم ڈیڈی چکسنگ (“ڈیڈی” یا “ادارہ”) نے آج تازہ ترین فنڈریزنگ مرحلےکے حوالے سے اہم اعلان کیا ہے۔ چینی اور بین الاقوامی اداروں کے گروپ میں ایپل ڈیڈی میں 1 ارب امریکی ڈالرز کی سرمایہ کاری کر گیا ہے، یوں ادارے کی تاریخ میں واحد سب سے بڑی سرمایہ کاری حاصل کی ہے۔

ڈیڈی چکسنگ حقائق نامہ

http://photos.prnasia.com/prnvar/20160513/8521603099

اس سرمایہ کاری کے ذریعے ایپل ڈیڈی میں تزویراتی سرمایہ کار بن چکا ہے اور ٹینسینٹ، علی بابا اور دیگر کلیدی معاون اداروں میں شامل ہوگیا ہے جوکروڑوں چینی ڈرائیوروں اور مسافروں کو خدمات فراہم کرنے والے گاڑی شیئر کرنے کے پلیٹ فارم کی تعمیر میں ڈیڈی کے مقصد میں مزید مدد دے گا۔

ڈیڈی کے بانی اور سی ای او چینگ وی نے کہا کہ “ایپل کی جانب سے تصدیق ہماری چار سال پرانی کمپنی کے لیے بہت بڑی حوصلہ افزائی اور تحریک ہے۔ ڈیڈی اپنے ڈرائیورز، سواروں اور عالمی شراکت داروں کے ساتھ سخت محنت کرے گا تاکہ ہر شہری کو نقل و حرکت کے لچکدار اور قابل بھروسہ مواقع دیے جا سکیں اور شہروں کو نقل و حرکت، ماحولیاتی اور روزگار کے چیلنجز سے نمٹنے میں مدد دی جا سکے۔

ایپل کے سی ای او ٹم کک نے کہا کہ “ڈیڈی اس جدت طرازی کی مثال پیش کرتا ہے جو چین میں آئی او ایس ڈیولپر کمیونٹی میں جگہ پا رہی ہے۔ ہم ان کے قائم کردہ کاروبار اور ان کی شاندار قائدانہ ٹیم سے بہت متاثر ہیں، اور ہماری نظریں آگے بڑھتے ہوئے ان کی مدد کرنے پر مرکوز ہیں۔”

اپنی ڈیٹا مائننگ اور تجزیے کی صلاحیتوں کے بل بوتے پر ڈیڈی اب اپنے پلیٹ فارم پر روزانہ 11 ملین سواریاں مکمل کرتا ہے، موبائل ٹیکنالوجی کی بنیاد پر نقل و حرکت کے مواقع کی وسیع رینج کے ساتھ 400 سے زیادہ چینی شہروں میں لگ بھگ 300 ملین صارفین کو خدمات دے رہاہے۔ ڈیڈی 14 ملین چینی کار مالکان اور ڈرائیوروں کے ساتھ کام کرتا ہے، اور نجی کار رکھنے والے شیئر میں 87 فیصد اور ٹیکسی رکھنے کے شعبے میں 99 فیصد حصہ رکھتا ہے۔” [1]

[1] “فوکس رپورٹ آن پرائیوٹ-کار ہیلنگ ان چائنا 2015ء”، چین قومی نیٹ ورک انفارمیشن مرکز

ڈیڈی چکسنگ ذرائع ابلاغ کے سوالات کے لیے

برعظیم چین میں

برنسوک گروپ
Didichuxing@brunswickgroup.com
8600 5960 (10) 86+

ہانگ کانگ

برنسوک گروپ
Didichuxing@brunswickgroup.com
5000 3512 852+

امریکا

سارڈ وربینن اینڈ کمپنی
Didichuxing@sardverb.com
8750 618 415 1+

تصویر – http://photos.prnasia.com/prnh/20160513/8521603099

بیجنگ-گوانگسی تعاون کے فروغ کے لیے ناننگ چونگ گوانکن سائنس اینڈ ٹیکنالوجی پارک کے ساتھ مل کر کام کرتا ہوا

ناننگ، چین، 10 مئی 2016ء/سن ہوا-ایشیانیٹ/– دسمبر 2015ء میں حکومت ناننگ، چونگ گوانکن سائنس اینڈ ٹیکنالوجی پارک کی انتظامی کمیٹی اور چونگ گوانکن ڈيولپمنٹ گروپ نے بیجنگ میں ایک تزویراتی تعاون کے ڈھانچہ پر مشتمل معاہدے پر دستخط کیے، اور دونوں علاقوں کے درمیان تعاون کو فروغ دینے اور جدت طرازی اور ہم آہنگی کو بڑھانے کے لیے تینوں فریقین کے لیے مشترکہ میکانزم تشکیل دیا گیا۔ معاہدہ 2015ء ناننگ-بیجنگ تعاون کے اتفاق کا نتیجہ تھا، اور ناننگ کی جانب سے جدت طرازی سے تحریک پانے والی ترقی کی حکمت عملی نافذ کرنے کا اہم طریقہ بھی۔

یہ تعاون صنعتوں، پالیسیوں، منصوبوں کے حوالے سے اور افراد کے تبادلے سے متعالق ہے، جو تین حصوں پر مشتمل ہے۔ پہلا ایک ناننگ-زیڈ پارک انوویشن سینٹر کا قیام، اور اسے سائنس و ٹیکنالوجی کا مرکز بنانا، تزویراتی ابھرتی صنعتوں میں مظاہرہ اور خدمات دینا جو صرف وسط-جنوبی اور جنوب-مغربی چین کو ہی خدمات نہ دیں بلکہ پورے آسیان ممالک کے لیے فائدے لے کر آئیں، ساتھ ہی صنعتوں کے تعاون، وسائل کے تبادلے اور نتائج اور جدت طرازی سے ہونے والی ترقی کو سہولت دینا۔ دوسرا، آئی ٹی، اسمارٹ سٹی، توانائی حفاظت اور ماحولیاتی تحفظ اور حیاتیاتی صحت عامہ کے شعبوں میں نئے تعاون کا آغاز ہے جو چونگ گوانکن سائںس اینڈ ٹیکنالوجی پارک کے روایتی شعبوں کی ترقی کی بنیاد پر ہو، ٹیکنالوجیکل پختگی، صنعت کاری کی اعلیٰ سطح اور وسیع تناظر کے ساتھ۔ تیسرا، ایک چین-آسیان آئی ٹی بیس تیار کرنا جو انٹرنیٹ + آسیان خطہ + چونگ گوانکن پارک + ناننگ کے نمونے پر کام کرے۔

تینوں فریقین کے مطابق یہ تعاون مکمل فوائد سے کھیلنے کا موقع دے گا اور باہمی فائدے لائے گا، جو نہ صرف بین العلاقائی مشترکہ کوشش سے ہونے والی جدت طرازی اور ترقی کو خدمات دے گا بلکہ جدت طرازی کی تحریک سے ناننگ میں ہونے والی ترقی کے نفاذ کو بھی بہتر بنا کر اسے نئے عہد میں لائے گا۔

گوانگ سی چوانگ خود مختار علاقے کی قائمہ کمیٹی کے رکن اور سیکریٹری میونسپل پارٹی کمیٹی وانگ سیاؤڈونگ، بیجنگ کے ڈپٹی میئر سوئی چی جیانگ اور چونگ گوانکن ڈیولپمنٹ گروپ کے صدر سو چیانگ نے دستخطی تقریب میں شرکت کی۔ ناننگ کے میئر چو ہونگ بو، ڈائریکٹر انتظامی کمیٹی چونگ گوانکن سائنس اینڈ ٹیکنالوجی پارک گو ہونگ اور چونگ گوانکن ڈیولپمنٹ گروپ کے جنرل مینیجر چو ینفان نے فریقین کی جانب سے معاہدے پر دستخط کیے۔

ذریعہ: ناننگ میونسپل بیورو آف نیوز

میگاپورٹ نے شمالی امریکا کے لیے ڈینیل ریان کو نائب صدر برائےسیلز مقرر کردی

برسبین، آسٹریلیا، 11 مئی 2016ء/پی آرنیوزوائر/– ایس ڈی این کی بنیاد پر لچکدارانٹرکنکشن کے رہنما عالمی ادارے میگاپورٹ نے آج اعلان کیا ہے کہ ڈینیل ریان نے شمالی امریکا کے لیے نائب صدر برائےسیلز کی حیثیت سے ادارے میں شمولیت اختیار کرلی ہے۔

میگاپورٹ لوگو۔

http://photos.prnasia.com/prnvar/20160510/8521602989
http://photos.prnasia.com/prnvar/20150203/8521500675LOGO

قیادت میں یہ اضافہ ایسے وقت میں آیا ہے جب میگاپورٹنے عالمی سطح پر 66 مقامات میں اضافی 6 مارکیٹوں اور 29 مقامات میں 8 مارکیٹوں کے لیے اپنی خدمات کی دستیابی کے ساتھ شمالی امریکا میں قدم جمانے کا عمل مکمل کیا ہے۔ اپنے عہدے میں ریان شمالی امریکا میں میگاپورٹ کے کاروبار کو پھیلانا جاری رکھنے اور عالمی گو ٹو مارکیٹ حکمت عملیوں کو سہارا دینے کے ذمہ دار ہوں گے۔ ریان میگاپورٹ کے سی ای اوڈینورمیڈکس کو براہ راست جوابدہ ہوں گے۔

چیف ایگزیکٹو آفیسرمیگاپورٹ لمیٹڈ ڈینورمیڈکس نے کہا کہ “ڈین ہماری صنعت میں ایک موثر اور متاثر کن سیلز رہنما کی حیثیت سے ثابت ہو چکے ہیں۔ وہ مستحکم سمجھ رکھتے ہیں کہ ادارے ڈیٹاسروسز کا ماحولی نظام تشکیل دینے کے لیے ایک رسدی زنجیر کی حیثیت سے کس طرح تعامل کریں۔ یہ، اور صارفین کے فروخت سفر کی گہری معلومات، انہیں نئی مارکیٹوں اور شعبوں میں میگاپورٹ کے ماڈل کو تحریک دینے پوزیشن میں لاتی ہے۔ یہ سب ڈان کو قطعی صارف طرفدار بناتی ہیں کیونکہ میگاپورٹ میں ہم صارفین کے تجربے کی دل وجان سے قدر کرتے ہیں۔”

ڈینورمیڈکس،چیف ایکزیکٹیو آفیسر میگاپورٹ لیمیٹیڈ۔

ریان بین الاقوامی ڈیٹا سینٹر مارکیٹ میں 10 سال سے زیادہ کا تجربہ رکھتے ہیں۔ انہوں نے ڈیٹا سینٹر خدمات فراہم کرنے والے معروف عالمی ادارے آئی او سے میگاپورٹ میں شمولیت اختیار کی، جہاں وہ حال ہی میں برطانیہ کے لیے نیو مارکیٹ ڈائریکٹر کی حیثیت سے کام کرچکے ہیں۔ انہوں نے امریکا میں آئی اوڈیٹاسینٹرز کے ساتھ انٹرپرائز اور چینلز سیلز میں اپنے کیریئر کا آغاز کیا جہاں انہوں نے عالمی گو ٹو مارکیٹ حکمت عملیوں کو سہارا دینے اور عملی طور پر نافذ کرنے میں سینئر کردار ادا کیے اور ادارے کے عالمی قدم بڑھائے۔ ریان ایسی ٹیکنالوجیوں اور اداروں کے زبردست حامی ہیں جو جدت طرازی کرتی ہیں اور قدیم مارکیٹوں کو تہہ و بالا کر دیتی ہیں۔

ریان نے کہا کہ “کلاؤڈ اور ڈیٹا سینٹر چلانے والوں کے ساتھ شراکت داری کے ذریعے ایک باہم منسلک برادری کی تعمیر پر واضح توجہ کے ساتھ میری نظریں لچکدارانٹرکنکٹ میں رہنما کی حیثیت سے میگاپورٹ کے اثر و رسوخ کو مسلسل بڑھانے پر ہیں۔ مجھے میگاپورٹ تحریک سے ہونے والے صنعتی تبدیلی کے عمل کا حصہ بننے اور ایسی باصلاحیت ٹیم کے ساتھ کام کرنے پر خوشی ہے۔”

میگاپورٹ کے بارے میں

میگاپورٹ الاسٹک انٹرکنکشن خدمات میں رہنما، عالمی آزاد اور غیر جانبدار ادارہ ہے۔ سافٹویئرڈیفائنڈ نیٹ ورکنگ کو استعمال کرتے ہوئے ادارے کا عالمی پلیٹ فارم صارفین کے لیے میگاپورٹ فیبرک میں نیٹ ورک پر دیگر خدمات کے ساتھ فوری طور پر منسلک ہونا ممکن بناتا ہے۔ خدمات کو صارفین موبائل ڈیوائسز، اپنے کمپیوٹر یا دیگر آزاد اے پی آئی کے ذریعے براہ راست قابو کر سکتے ہیں۔ آسٹریلیا، ایشیا بحر الکاہل اور شمالی امریکا میں ادارے کے وسیع اثرات ایک غیر جانبدار پلیٹ فارم فراہم کرتے ہیں جو متعدد مارکیٹوں میں کئی کلیدی ڈیٹاسینٹر فراہم کنندگان تک پھیلا ہوا ہے۔

میگاپورٹ آسٹریلیا، نیوزیلینڈ، سنگاپور، ہانگکانگ، کینیڈا اور امریکا میں تیرہ مارکیٹوں میں 66 ڈیٹاسینٹرز چلاتا ہے اور اس وقت شمالی امریکا میں اضافی ڈیٹاسینٹرز اور لندن، ڈبلن، ایمسٹرڈیم اور اسٹاک ہوم سمیت یورپ کی کلیدی مارکیٹوں میں موجودگی کو بڑھا رہا ہے۔

میگاپورٹ کے ایس ڈی این بیسڈانٹرکنکشن فیبرک کے بارے میں مزید جاننے کے لیے ملاحظہ کیجیےhttps://megaport.com۔

روابط برائے ذرائع ابلاغ

ای میل: media@megaport.com

وینڈی ہل
سیفائرکمیونیکیشنز
فون:
614-2717-3203+
ای میل: wendy@sapphirecommunications.com.au

یہاں مذکور تمام ادارے اور مصنوعات کے نام ان کے متعلقہ مالکان کے تجارتی نشانات اور مندرجہ تجارتی نشانات ہیں۔ خبری اعلامیہ میں فراہم کردہ معلومات اشاعت کے وقت درست ہے اور بغیر پیشگی اطلاع کے لیے تبدیل ہو سکتی ہے۔

لوگو –http://photos.prnasia.com/prnh/20150203/8521500675LOGO
تصویر –http://photos.prnasia.com/prnh/20160510/8521602989

کینٹن میلہ 119واں کل 28 ارب امریکی ڈالرز کے کاروباری معاہدوں کے ساتھ مکمل

گوانگ چو، چین، 11 مئی 2016ء/پی آرنیوزوائر/– 119 واں چائنا امپورٹ اینڈ ایکسپورٹ فیئر (کینٹن میلہ) 5 مئی کو کامیابی کے ساتھ مکمل ہوا۔ میلے میں ہونے والے کل معاہدے 182.288 ارب رینمنبی (28.084 ارب امریکی ڈالرز) کی مالیت کے رہے۔

میلے میں غیر ملکی مہمانوں کی تعداد 185,596 تک جا پہنچی، جو سال بہ سال میں 0.43 فیصد اضافہ ہے؛ جس میں ہانگ کانگ، بھارت، امریکا، تائیوان، جنوبی کوریا، تھائی لینڈ، ملائیشیا، روس، انڈونیشیا اور آسٹریلیا سب سے زیادہ نمائندگی رکھنے والے ممالک رہے۔ 2015ء میں سرفہرست 250 عالمی خوردہ فروشوں میں سے 92 – بشمول وال-مارٹ، ہوم-ڈیپوٹ، ٹیسکو اور کیریفور— بھی دنیا بھر کے 200 دیگر ممالک اور خطوں کے نمائندگان کے ساتھ شریک تھے۔

غیر ملکی خریداروں میں 39.44 فیصد برقی و برقیاتی گھریلو مصنوعات کی صنعت سے تعلق رکھتے تھے، 30.49 فیصد، 28.45 فیصد اور 27.05 فیصد بالترتیب صارفی مصنوعات، گھریلو سجاوٹ اور تحفوں کی صنعت سے تھے اور 24.26 فیصد نے مشینری کے شعبے کی نمائندگی کی۔

تقریب میں ہونے والے معاہدوں پر تبصرہ کرتے ہوئے کینٹن میلے کے ترجمان سو بنگ نے کہا کہ “زیادہ تر آرڈر برانڈ زون میں کیے گئے جہاں تجارت کی شرح 9.32 ارب امریکی ڈالرز رہی، جو گزشتہ سال کے مقابلے میں 6 فیصد زیادہ ہے اور کل تجارتی حجم کے 33.2 فیصد پر مشتمل ہے۔ یہ ظاہر کرتا ہے کہ خریدار اس طریقے سے کاروبار کرنے کی واضح ترجیحات رکھتے ہیں اور یہ کہ قیمتوں کی تبدیلی کے حوالے سے کم حساسیت اور زیادہ توجہ مصنوعات اور خدمات کے معیار پر ہے۔”

منتظم کی حیثیت سے سی ایف ٹی سی نے کینٹن میلے کے اس ایڈیشن میں کئی بہتریاں کیں، جن میں زیادہ تر توجہ قواعد، کارروائی اورانتظام، حفاظت اور مجموعی خدمات پر رہی۔ اہم پیشرفت کی ایک مثال ملکیت دانش کی حفاظت ہے، جس کی ممکنہ خلاف ورزیوں کے حوالے سے کسی بھی تشویش سے نمٹنے کے لیے ایک مخصوص استقبالیہ مرکز مقرر کیا گيا۔

سی ایف ٹی سی نے فیس بک اور لنکڈ ان جیسے سوشل میڈیا پلیٹ فارموں کو شامل کرکے “اسمارٹ کینٹن میلہ” کو تحریک دی، اور “مصنوعات کو نمایاں” کرنے کا اجرا کیا، اپنے وی چیٹ سروس اکاؤنٹ کو بہتر بنایا اور رہائش اور سفر کی خدمات کے مزید آپشنز فراہم کیے۔ 25,000 نئے خریداروں نے سوشل میڈيا اور سرچ انجنوں کے ذریعے رجسٹریشن کروائی۔

120 واں کینٹن میلہ اکتوبر 2016ء میں شروع ہوگا اور تمام شرکا کے لیے غیر معمولی نمائشی خدمات کا پلیٹ فارم فراہم کرنا جاری رکھے گا۔

کینٹن میلے کے بارے میں

چائنا امپورٹ اینڈ ایکسپورٹ میلہ، جسے کینٹن میلہ بھی کہتے ہیں، سال میں دو مرتبہ بہار و خزاں میں گوانگ چو میں ہوتا ہے۔ 1957ء سے ہونے والا یہ میلہ جامع نمائش ہے جو طویل ترین تاریخ، اعلیٰ ترین سطح، بڑے پیمانے اور مصنوعات کی سب سے زیادہ تعداد کے ساتھ عالمی خریداروں کی وسیع تر تقسیم اور چین میں سب سے زیادہ کاروباری حجم بھی رکھتا ہے۔