غیردستاویزی کاروبار ہورہا ہے، اس کو ٹیکس نیٹ میں لانا ہوگا، وزیراطلاعات

لاہور(پی پی آئی)وفاقی وزیر برائے اطلاعات و نشریات عطاء اللہ تارڑ نے کہا ہے کہ ملک میں غیردستاویزی کاروبار ہورہا ہے، اس کو ٹیکس نیٹ میں لانا ہوگا۔ پریس کانفرنس کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہماری حکومت عوام کی فلاح و بہبود کیلئے کوشاں ہے، وزیر اعظم نے ہر وزارت کے لیے اہداف مقرر کیے ہیں، وزیر اعظم نے اگلے 5 سال کیلئے وزارتوں کے اہداف مقرر کر دیئے، وزیر اعظم نے کارکردگی کو جانچنے کا تہیہ کیا ہے، جس کے لیے ہر وزارت کو حقیقت پر مبنی اہداف دیئے گئے ہیں۔وفاقی وزیر کا کہنا ہے کہ ایف بی آر کو ڈیجیٹلائزیشن کے حوالے سے ہدف دیا گیا ہے، جدید ٹیکنالوجی کے ذریعے ان اہداف کو دیکھا جائے گا، تحریری طور پر تمام وزارتوں کو اہداف سے متعلق آگاہ کیا گیا ہے، وزارت خزانہ کو مہنگائی، بیروزگاری میں کمی کا ہدف دیا گیا ہے، وزارت خزانہ کو گروتھ، آئی ایم ایف پروگرام، قرضہ جات پر اہداف ملے۔عطا تارڑ نے کہا کہ وزیراعظم شہباز شریف نے ماضی میں ڈیلیور کرکے دکھایاہے، سولہ ماہ کی حکومت میں ملک میں استحکام آیا ہے، اب بھی شاہانہ اخراجات میں کمی کی جارہی ہے، کابینہ ارکان میں کوئی تنخواہ مراعات نہیں لے رہا، کابینہ عوام کو جوابدہ ہے کیوں کہ عوام کا ووٹ لے کر ہم اقتدارمیں آئے ہیں، غیردستاویزی کاروبار ہورہا ہے، اس کو ٹیکس نیٹ میں لانا ہوگا۔قبل ازیں لاہور میں ایسٹر کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ایسٹر پر مسیحی برادری کو مبارک باد پیش کرتا ہوں، ہماری ذمے داری ہے کہ آپ کے حقوق کا تحفظ کریں، ہمیں امن اور ہم آہنگی کا پیغام دینا ہے، امن، محبت اور خوش حالی کو فروغ ملنا چاہیے، آئین کہتا ہے سب کے حقوق برابر ہوں گے، ہم مل جل کر اس ملک کو عظیم بنائیں گے، مسیحی برادری نے بہت عزت اور تکریم دی۔عطاء تارڑ کا مزید کہنا ہے کہ میں 70 ہزار مسیحی ووٹرز کا نمائندہ بن کر قومی اسمبلی میں آیا ہوں، قیامِ پاکستان میں مسیحی برادری کا اہم کردار ہے، مسیحی برادری نے ملکی سلامتی، بقا اور ترقی کے لیے بے پناہ قربانیاں دیں، مسیحی برادری کے حقوق کا تحفظ یقینی بنائیں گے، ہمیں اتحاد اور ہم آہنگی کو فروغ دے کر معاشرے سے نفرتوں کا خاتمہ کرنا ہے، مسیحی برادری کے ساتھ مل کر ملکی ترقی و خوشحالی کے لیے کام کریں گے۔

Latest from Blog