بلاول بھٹو کا سیاسی جماعتوں کو مفاہمت اور مسائل کے حل کیلئے ہاتھ ملانے کا مشورہ

لاہور(پی پی آئی)چیئرمین پاکستان پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری نے ملکی مسائل کے حل کے لیے سیاستدانوں کو ایک دوسرے سے ہاتھ ملانے کا مشورہ دے دیا۔الحمرا ہال میں بلاول بھٹو زرداری کا سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کہنا تھا کہ ملک میں نفرت کی سیاست عروج پر ہے، سیاست میں اختلاف رائے کیا حترام کی گنجائش نہیں رہی، سیاست کو سیاست نہیں رہنے دیا گیا،سیاست کو ذاتی دشمنی میں بدل دیا گیا، عوام مہنگائی، بیروزگاری اور غربت سے پریشان ہیں۔انہوں نے کہا کہ نفرت اور گالم گلوچ کی بجائے بات چیت کی ضرورت ہے، سیاستدان ایک دوسرے سے ہاتھ نہیں ملائیں گے تو مسائل حل نہیں ہوں گے، گالم گلوچ اور الزام تراشی کی بجائے پاکستان کا سوچیں۔

بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ آصف زرداری نے تمام سیاستدانوں کو مفاہمت کا پیغام بھیجا، کچھ سیاستدان ملکی مفاد میں بھی مفاہمت پر یقین نہیں رکھتے، صدر زرداری کے مفاہمت کے پیغام پر نامناسب ردعمل دیا گیا، پیپلزپارٹی کے پاس عوامی مسائل کا حل موجود ہے۔انہوں نے کہا کہ ہم نیانتخابی مہم میں 10نکاتی ایجنڈا پیش کیا تھا، ہمارے ایجنڈے کو تنقید کا نشانہ بنایا گیا، ہم نے انتخابی مہم میں کسان کارڈ جاری کرنے کا کہا تھا، ہمارے کسان کارڈ پر بھی تنقید کی گئی۔سابق وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ آج پاکستان کے کسان سراپا احتجاج ہیں، کسان کارڈ چاروں صوبوں میں ہوتا تو شاید کسانوں کا اتنا بڑا مسئلہ پیدا نہ ہوتا، ہم حکومت میں ہوں یا اپوزیشن میں مثبت کردارادا کرنا چاہتیہیں، پیپلزپارٹی کا مثبت کردارہی تمام مسائل کا حل ہے۔انہوں نے کہا کہ ہمارا مطالبہ ہے عدالتی اصلاحات کی جائیں، عدالتی اصلاحات کیلئے آئینی ترمیم لانے کی ضرورت ہے، ریفارمز لائیں تاکہ آئندہ بھٹو کے عدالتی قتل جیسے فیصلے دوبارہ نہ ہوں، اگر ہم عدالتی اصلاحات نہیں کرتے تو زیادتی ہوگی۔

Latest from Blog