مقبوضہ جموں وکشمیر: مودی کے دورے کے موقع پر ہڑتال کی کال

سرینگر(پی پی آئی) بھارت کے غیر قانونی زیر قبضہ جموں وکشمیر میں کل جماعتی حریت کانفرنس نے بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی کے دورے کے موقع پر21جون بروز جمعہ علاقے میں مکمل ہڑتال کی کال دی ہے۔کشمیر میڈیا سروس کے مطابق ہڑتال کا مقصد بھارت کو یہ واضح پیغام دینا ہے کہ جموں وکشمیر عالمی سطح پر تسلیم شدہ متنازعہ خطہ ہے اور کشمیری غیر قانونی بھارتی تسلط کے خاتمے تک اپنی جدوجہد ہر قیمت پر جاری

 رکھیں گے۔ کل جماعتی حریت کانفرنس کے ترجمان ایڈوکیٹ عبدالرشید منہاس نے سرینگر میں ایک بیان میں کہا کشمیری بی جے پی کی زیر قیادت ہندتوا حکومت کے تمام کشمیر مخالف ایجنڈوں کو مسترد کرتے ہیں۔انہوں نے نریندر مودی کے دورے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا کہ بھارتی قیادت اس طرح کے دوروں کے ذریعے عالمی برادری کو علاقے کی صورتحال کے بارے میں گمراہ کرنے کی کوشش کرتی ہے۔ ترجمان نے کہا کہ بی جے پی کی فرقہ پرست بھارتی حکومت نے نہتے کشمیریوں پر مظالم کے تما م ریکارڈ توڑ دیے ہیں، وہ نہ صرف کشمیریوں کو جبر واستبداد کا نشانہ بنا رہی ہے بلکہ انکے تمام بنیادی حقوق سلب کر رکھے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ دنیا جموں وکشمیر کو ایک متنازعہ خطہ مانتی ہے اور وہ کشمیر پر بھارتی موقف کو تسلیم نہیں کرتی ہے۔ ترجمان نے کشمیریوں پر زور دیا کہ وہ ہڑتال کو بھر پور طریقے سے کامیاب بنائیں۔ انہوں نے عالمی برادری سے مطالبہ کیا کہ وہ جنوبی ایشیا میں امن و استحکام کو یقینی بنانے کیلئے مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے کردار ادا کرے۔

Latest from Blog