قلت آب سے دوچار ممالک کی فہرست میں پاکستان تیسرے نمبر پر

اسلام آباد(پی پی آئی)پانی کی شدید کمی کا سامنا کرنے والے ممالک کی فہرست میں پاکستان تیسرے نمبر پر ہے، حالات یہی رہے تو 2025 کے اختتام تک ہمارا ملک پانی کی مکمل قلت والا ملک بن جائے گا۔پی پی آئی کے مطابق قیام پاکستان کے وقت ملک میں پانی کی دستیابی 5ہزار کیوبک میٹر فی کس تھی لیکن اب  یہ ایک ہزار کیوبک میٹر سے بھی کم رہ گئی ہے، پوری دنیا میں پانی ذخیرہ کرنے کی اوسط شرح 40 فیصد ہے اور ہم اپنے دریائی پانی کا صرف 10 فیصد حصہ ہی ذخیرہ کر پاتے ہیں۔ دریائی پانی کی کمی کے باعث ہماری زراعت کا زیادہ انحصار زیر زمین پانی پر ہی باقی رہ جاتا ہے جس کا بے دریغ استعمال کیا جا رہا ہے، ستم یہ ہے کہ ہم زمین سے جتنا پانی لیتے ہیں اْس کی انتہائی کم مقدار زمین کو واپس کرتے ہیں، یوں سمجھ لیجئے کہ ہم زمین کو پانی واپس لوٹانے کے معاملے میں دنیا بھر میں 164 ویں نمبر پر ہیں۔صورتحال یہ ہو چکی کہ ملک کے بڑے شہروں میں بھی پانی کی کمی بڑھتی چلی جا رہی ہے۔قصہ مختصر یہ ہے کہ جمع تفریق اپنی جگہ لیکن پانی کی کمی کے حوالے سے حالات سنگین صورت اختیار کرچکے ہیں۔

Latest from Blog