مودی جیتے تو 6 ماہ میں آزاد جموں و کشمیر پر حملہ کریں گے: عمر عبداللہ

 سری نگر/مقبوضہ کشمیر(پی پی آئی)مقبوضہ جموں و کشمیر میں نیشنل کانفرنس کے نائب صدر عمر عبداللہ نے خبردار کیا ہے کہ اگر نریندر مودی دوبارہ بھارت کے وزیر اعظم منتخب ہوئے تو وہ چھ ماہ کے اندراندر آزاد جموں و کشمیر پر حملہ کریں گے۔عمر عبداللہ نے ایک  میڈیا انٹرویو میں کہا کہ اگر بھارت میں بھارتیہ جنتا پارٹی دوبارہ اقتدار میں آئی تو انہیں مقبوضہ جموں و کشمیر کے عوام کے لیے ریلیف کی کوئی توقع نہیں۔ انہوں نے کہاکہ نیشنل ڈیموکریٹک الائنس سے ہمیں کوئی امید نہیں ہے۔انہوں نے کہا کہ جہاں تک جموں و کشمیر کا تعلق ہے، ان کے اقتدار میں واپس آنے سے کچھ بھی اچھا نہیں ہوگا۔انہوں نے کہا کہ بی جے پی کے سینئر لوگ آئین کو ٹکڑے ٹکڑے کرنے، اس کو دوبارہ لکھنے اوربھارت کو ازسرنو تشکیل دینے کی باتیں کررہے ہیں۔ عمرعبداللہ نے خبردارکیاکہ مودی کے دوبارہ منتخب ہونے کی صورت میں آزاد کشمیر پر پاکستان کے ساتھ فوری جنگ کا امکان ہے۔ انہوں نے بی جے پی کے سینئر عہدیداروں کے بیانات کا حوالہ دیا جن میں کہاگیا ہے کہ مودی کے دوبارہ انتخاب کے چھ ماہ کے اندر اندرآزاد کشمیر پر پاکستان کا کنٹرول ختم کرنے کی کوشش ہو گی جس کا مطلب یہ ہے کہ یہ جنگ کا باعث بن سکتا ہے۔انہوں نے امید ظاہر کی کہ ”انڈیا”بلاک اسمبلی انتخابات سے قبل جموں و کشمیر کی ریاستی حیثیت بحال اور زمینوں، ملازمتوں اور ڈومیسائل کے تحفظ جیسے مسائل کو حل کرے گا۔ انہوں نے افسوس کا اظہار کیا کہ نئی دہلی اور اس کی ایجنسیاں این سی کو تباہ کرنے کی کوشش کر رہی ہیں۔عمرعبداللہ نے مذہبی بنیادوں پر تقسیم اور پاکستان کو نشانہ بنانے پر بی جے پی کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہاکہ یہ اس کی انتخابات میں ناقص کارکردگی کی نشاندہی کرتا ہے۔۔

Latest from Blog